News Search
Home News Dictionary TV Channels Names Weather Live Cricket Videos Photos Results Naats
Home Taza Tareen
سائسند انوں نے مستقبل میں انسانی خون سے بیٹریاں چارج کرنے کا منصوبہ بنا لیا     بھارت کی حکمران جماعت بی جے پی نے شاہ رخ کو ملک کا غدار قرار دےدیا     اصلی یا نقلی شہد معلوم کرنے کا انتہائی آسان طریقہ جانیئے     افغانستان: مہاجرین کے کیمپ میں چھت گرنے سے 6 افراد ہلاک     پیٹ کے پھولنے کا باعث بنے والی غذائیں کو ن سی ہیں ، جانیئے اہم معلومات     ڈاکٹر ذاکر نائیک کے خلاف بھارتی خفیہ ایجنسیوں کی ایک اور گھٹیا سازش تیار     کراچی: مختلف علاقوں میں فائرنگ سے3 افراد زخمی     کراچی: قانون نافذ کرنے والے اداروں کی کارروائی، سیاسی کارکن سمیت 3 مشتبہ افراد گرفتار     منی ٹریل نہ بتائی گئی تو پاناما کیس بہت اہم دور میں داخل ہو جائے گا: شیخ رشید     عمران خان قوم کوبے وقوف بنا رہے ہیں، ان کے پاس ثبوت نہیں، امیر مقام     
Urdu News
Maulana Tariq Jamil
a
Naat Khawan
Amjad Sabri Farhan Ali Qadri
Fasih Uddin Soharwardi Ghulam Mustafa Qadri
Imran sheikh Attari Junaid Jamshed
Owais Raza Qadri Shahbaz Qamar Faridi
Syed Mohammad Furqan Qadri Ummeh Habiba
Waheed Zafar Qasmi Zulfiqar Ali
UrduWire Names Directory
Muslim Names Arabic Names
Muslim Boy Names Muslim Girl Names
Pictures Gallery
Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World Cleaning The Kaaba Area - One Of The Best Jobs In The World
 Who Is Your Favourite Team In Pakistan Super League 2016?? Who Is Your Favourite Team In Pakistan Super League 2016??
Musical singing competition organized by Citizen foundation in Pakistan Musical singing competition organized by Citizen foundation in Pakistan
View all Pictures

 

Home >> Urdu News >> Channel-5
تازہ ترین خبریں Share your views
امریکی جیل میں ڈاکٹر عافیہ کی موت ....سراج الحق کے بیان نے حکومتی ایوانوں میں ہلچل مچا دی [چینل-٥] 12 Jan, 2017
لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ ڈاکٹرعافیہ کی امریکی جیل میں موت پوری پاکستانی غیرت مند عوام کی موت ہو گی۔امریکی جیل میںعافیہ کی موت کا انتظار نہ کیا جائے ۔ریاست پاکستان اوبامہ سے درخواست کرے کہ وہ عافیہ کی رہائی کے لیے خصوصی اختیارات کا استعمال کریں جس طرح دیگر 1300 قیدیوں کی رہائی کے لیے کیے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے سپریم کورٹ میں پانامہ لیکس کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ رواں ماہ جنوری کی 20 تاریخ کو اوبامہ کی مدت ختم ہو رہی ہے اور نئے منتخب امریکی صدرٹرمپ 20 جنوری کو اپنے عہدے کا حلف اٹھائیں گے ۔ امریکہ کے صدربارک اوبامہ نے اپنے خصوصی اختیارات کو استعمال کرتے ہوئے 1300 قیدیوں کو رہا کر دیا ہے اور اس کے چند دن باقی ہیں اور ان چند دنوں میں اگر حکومت پاکستان عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے درخواست دے تو 100 فیصد امکان ہے کہ عافیہ صدیقی کی رہائی ہو جائےگی۔اس کے لیے میں وزارت خارجہ سے بات کروں گا ۔سینٹ میں بھی عافیہ صدیقی کی رہائی کے لیے بات کرنا چاہوں گا لیکن وقت کم ہے اس لیے ریاست پاکستان سے اپیل کروں گا کہ امریکی صدراوبامہ کی مدت مکمل ہونے سے پہلے عافیہ کی رہائی کے لیے درخواست دے کیونکہ ڈاکٹر عافیہ قوم کی بیٹی ہے اور پاکستان کی عزت ہے اور ہر لحاظ سے ہمارے اوپر یہ قرض ہے کہ ہم عافیہ کی رہائی کے لیے کوششیں کریں ۔ سراج الحق نے کہا کہ جماعت اسلامی پاکستان پانامہ لیکس میں سب سے پہلے سپریم کورٹ آئی ہے پانامہ سکینڈل کے بعد جماعت اسلامی پاکستان نے سڑکوں پر احتجاج کیا۔ٹرین مارچ کیا ۔عدالتوں میں احتساب کے لیے بل پیش کیے اور اس کے ساتھ عدالت کے دروازے پر بھی دستک دی۔ جماعت اسلامی کا موقف یہ ہے کہ سب سے پہلے اس کیس میں جن لوگوں پر ذمہ داری بنتی ہے وہ نواز شریف اور اس کا خاندان ہے۔کیوں کہ وزیراعظم پاکستان نواز شریف کے خاندان کے چار افراد کا نام پانامہ لیکس میں آیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ آج عدالت نے ہمارے موقف کی تائید اور ہماری پٹیشن کی تعریف بھی کی ہے لیکن عدالت نے مناسب سمجھا کہ حکومت اپنا موقف پیش کرے اور اس کے بعد جماعت اسلامی کا موقف سنا جائے۔ہم مناسب سمجھتے ہیں کہ اس خرابی کی جڑ حکمران خاندان ہیں۔جب تک حکمران خاندان کا احتساب نہ ہو اس وقت تک اصلاح کرنا ناممکن ہے اس لیے بدھ کو عدالت میں نئی درخواست جمع کرائی تھی جس میں جماعت اسلامی نے نواز شریف کو عدالت میں بلانے کی استدعا کی تھی اور مجھے امید ہے کہ وہ لمحہ ضرور آئے گا جب وزیراعظم کو عدالت میں آنا پڑے گا اور پانامہ لیکس کے حوالے سے جواب دینا پڑے گا۔انہوں نے کہاکہ میں اس بات کو واضح کرنا چاہتا ہوں کہ پانامہ لیکس ایک بنیادی دستاویزات ہیں اور اس میں چھ سو سے زیادہ پاکستانیوں کے نام ہیں پانامہ لیکس میں ججوں کے نام،سابق بیوروکریٹس،سیاسی رہنماﺅں اور عام لوگوں کے نام بھی ہیں لیکن ہم چاہتے ہیں کہ پہلے مرحلہ میں نواز شریف اور ان کے خاندان کا احتساب ہو اس کے بعد ان سب لوگوں کا احتساب ہو جن کا پانامہ لیکس میں نام ہے۔ایک سوال کے جواب میں سراج الحق نے کہا کہ ہم نے وزیر اعظم کو پانامہ لیکس کے کیس کے فیصلہ آنے تک کام سے روکا جانے کا کہا ہے۔میں نے وزیراعظم کے استعفیٰ کا مطالبہ نہیں کیا تھا۔وزیراعظم سے استعفیٰ کا مطالبہ قبل از وقت ہے لیکن انصاف کا بول بالا کرنے کے لیے پانامہ لیکس کا فیصلہ آنے تک کام سے روکا جائے کیونکہ اس مقدمہ میں نیب، ایف آئی اے اور دیگر ادارے ملوث ہوں گے تفتیش کرنے کے لیے بے شمار ایجنسیوں کو دستاویزات کی جانچ پڑتال کرنی ہو گی ۔نواز شریف اگر وزیراعظم آفس میں رہے گا تو یہ ادارے کام نہیں کر سکیں گے۔ہمارے کمیشن کا مطالبہ اس وقت تھا جب تک عدالت نے ذمہ داری قبول نہیں کی تھی اور اس وقت تمام سیاسی جماعتوں کا بھی کمیشن کا مطالبہ تھا مگر اب سپریم کورٹ نے خود ہی یہ موقف اختیار کیا ہے اور اس بینچ میں قابل لوگ ہیں جس پر ہمیں اعتماد ہے اور میں سمجھتا ہوں کہ یہ بینچ اس قابل ہے کہ اس پورے کیس کو سنے اور ہم اس کے اچھے فیصلے کے انتظار میں ہیں ۔انہوں نے کہا کہ اگر پانامہ پر بھی کوئی فیصلہ نہیں آتا ہے اور ”مٹی پاﺅ“ کی بنیاد پر فیصلے ہو گئے تو ہم سمجھیں گے کہ ایک بار پھر نظریہ ضرورت کے مطابق کام ہو گیا جس کی ہمیشہ ہم نے مخالفت کی ہے۔ایک سوال کے جواب میں سراج الحق کا کہنا تھا کہ پانامہ ایک حقیقت ہے جن لوگوں کے نام پانامہ پیپرز میں ہیں وہ حقیقت ہے ۔اگر پانامہ حقیقت نہ ہوتا تو وزیراعظم نواز شریف اسمبلی میں اس پر بار بار کیوں خطاب کرتے اور قوم کے ساتھ خطاب میں وزیراعظم نے مانا ہے کہ میرے بیٹوں کے نام پانامہ لیکس میں ہیں اور یہ بھی مانا ہے کہ میں احتساب کے لیے تیار ہوں ۔
View News As Image
Post Your Comments
Select Language:    
Type your Comments / Review in the space below.

Name: Email:(Will not be shown) City:
Enter The Code:

 
Home | About Us | Contact Us |  Profiles |  Privacy Policy & Disclaimer | What is Meta News?
Top Searches: Jang News Cricinfo Express Tribune,  , SSC Part 1 Results 2016   Dunya News Bol News Live Samaa News Live Metro 1 News Waqt News Hum TV PTV Sports Live KTN News
Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on "as it is" based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Please read more!

UrduWire.com - First ever Urdu Meta News portal