انکم ٹیکس قوانین2002 میں مزیدترامیم کا مسودہ تیار

سماء نیوز  |  Aug 06, 2020

بینکنگ کمپنیز رپورٹنگ رولز 2010 میں اہم ترمیم تجویز کی گئی ہے۔کھاتہ داروں کے ڈیپازٹس اسٹیٹمنٹ کی معلومات دینا ہوگی۔

ایف بی آر کی مجوزہ انکم ٹیکس قوانین 2002 میں مزید ترامیم کے مسودے کے مطابق ماہانہ 1 کروڑ روپے یا زیادہ جمع کرانے والے کھاتہ داروں کی اضافی معلومات بینک کو دینا ہونگی۔

اس کے علاوہ ماہانہ 2 لاکھ روپے یا زیادہ کا کریڈٹ کارڈ بل ادا کرنے والوں کی معلومات دینا ہونگی جبکہ ماہانہ 10 لاکھ روپے یا زیادہ نقد نکلوانے والوں کی بھی معلومات طلب کی جاسکیں گی۔

مجوزہ ترمیم کے تحت ڈیبٹ اسٹیٹمنٹ پرمنافع کی معلومات بھی دینا ہونگی جبکہ ایف بی آر کو بینکنگ دفاتر،اکاؤنٹس،دستاویزات اورکمپیوٹر تک رسائی دینا ہوگی۔

مسودے میں بتایا گیا ہے کہ قوانین لاگو ہونے کے 30 دن کے اندر بینکنگ کمپنی کو ایک افسر نامزد کرنا ہوگا،دوسری صورت میں بینکنگ کمپنی کا صدر یا پرنسپل افسر ہی بینکنگ افسر تصور ہوگا۔

اس کے علاوہ متعلقہ بینکنگ افسر ایف بی آر کومطلوبہ معلومات دینے کا پابند ہوگا،کھاتہ داروں کی معلومات ماہانہ بنیاد پر فراہم کرنا ہونگی جبکہ مالی ادارے 5 سال کا ریکارڈ مرتب کرنے کے پابند ہونگے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More