ایف اے ٹی ایف کا پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ

اردو نیوز  |  Jun 25, 2021

منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کو روکنے کے لیے کام کرنے والا بین الاقوامی ادارے فنانشل ایکشن ٹاسک فورس (ایف اے ٹی ایف) نے پاکستان کو گرے لسٹ میں رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔

فیصلے کا اعلان ایف اے ٹی ایف کے پیرس میں ہونے والے پانچ روزہ ورچوئل اجلاس کے اختتام پر کیا گیا۔

ایف اے ٹی ایف اجلاس کے اختتام پر کی گئی پریس کانفرنس میں ادارے کے صدر کا کہنا تھا کہ ’پاکستان نے متعدد ایریاز میں پیشرفت کی ہے لیکن اہم ایریاز میں پیشرفت میں ناکام ہوا ہے۔‘

انہوں نے ایشیا پیسیفک گروپ کی سفارشات کے بعد پاکستان کی کوششوں کو سراہا تو توقع ظاہر کی کہ مزید بہری کے لیے حکومت پاکستان کوششیں جاری رکھے گی۔

پاکستان کو طویل عرصے سے گرے لسٹ میں برقرار رکھے جانے کے سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ‘ہمارے اصول واضح ہیں، ان پر عمل نہ کر سکنے والوں کو لسٹ میں رہنا پڑے گا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو منی لانڈرنگ کا نیا ایکشن پلان دیا جا رہا ہے۔  اردو نیوز کے پوچھے گئے سوال پر ایف اے ٹی ایف کے صدر نے کہا کہ وہ انڈیا میں نیوکلیئر لیک معاملے سے آگاہ ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ’انڈیا کے جائزے کے حوالے سے اعلان کردہ اقدام کورونا وبا کی وجہ سے معطل ہے جیسے ہی صورتحال بہتر ہوئی ہم اس سلسلے کو آگے بڑھائیں گے۔‘

قبل ازیں ایف اے ٹی ایف کی ویب سائٹ پر اعلان کیا گیا تھا کہ جمعہ کی شام کو اجلاس کے خاتمے کے بعد نیوز کانفرنس کے ذریعے فیصلوں کا اعلان کیا جائے گا۔

اجلاس میں منی لانڈرنگ اور دہشت گردی کی مالی معاونت کے خلاف پاکستان کی کارکردگی کا جائزہ لے کر گرے لسٹ سے نکالنے یا نہ نکالنے کا فیصلہ کیا جانا تھا۔

رواں سال فروری میں ایف اے ٹی ایف کے اجلاس میں پاکستان کو گرے لسٹ سے نکلنے کے لیے جون تک کی مہلت دی گئی تھی۔

اس وقت نیوز کانفرنس سے خطاب میں ایف اے ٹی ایف کے جرمنی سے تعلق رکھنے والے صدر ڈاکٹر مارکس پلیئر نے کہا تھا کہ ’پاکستان نے ایف اے ٹی ایف کو اعلیٰ سطح پر ایکشن پلان پر عمل درآمد کی یقین دہانی کرائی ہے، اس وقت پاکستان کو بلیک لسٹ میں نہیں ڈالا جا سکتا۔‘

ان کا کہنا تھا کہ ’پاکستان نے 27 میں سے 24 نکات پر عمل درآمد کرلیا ہے۔‘

فیصلے کے اعلان سے قبل پاکستانی حکام نے توقع ظاہر کی تھی کہ ملک کی کارکردگی دیکھتے ہوئے اجلاس میں پاکستان کو گرے لسٹ سے نکالنے کا فیصلہ ہو سکتا ہے۔

Want to learn more about the FATF? Today is the final day of its June Plenary.

See more about the agenda https://t.co/GxkNpVjRUm#FollowTheMoney pic.twitter.com/90pzzMHIR6

— FATF (@FATFNews) June 25, 2021

پاکستانی حکام کی اس امید کی ایک وجہ رواں ماہ کے شروع میں ایف اے ٹی ایف کے ذیلی ادارے ایشیا پیسیفک گروپ کی طرف سے پاکستان کی ریٹنگ بہتر کرنے کا اعلان بھی تھا۔ 

وفاقی وزیر برائے توانائی اور ایف اے ٹی ایف کے لیے پاکستان کے نگران وزیر حماد اظہر نے کہا تھا کہ ’یہ بڑے پیمانے پر قانونی اصلاحات کا نتیجہ ہے جو 14 وفاقی اور تین صوبائی قوانین میں کی گئی ہیں۔‘

ایشیا پیسفک گروپ کی دو جون کو جاری ہونے والی میوچل ایولیویشن کی جائزہ رپورٹ کے مطابق ’پاکستان نے یہ ریٹنگ ایف اے ٹی ایف کی 40 تکنیکی سفارشات میں سے 31 پر عمل درآمد کر کے حاصل کی تھی۔‘

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More