لیورپول ٹیم سمیت مختلف کھلاڑیوں کا جارج فلوئیڈ سے اظہار یکجہتی

سماء نیوز  |  Jun 02, 2020

تصویر کریڈٹ: اے پیامریکا میں پولیس اہل کاروں کے ہاتھوں قتل ہونے والے جارج فلوئیڈ سے یکجہتی کیلئے کھلاڑی بھی میدان میں آگئے۔ دنیا بھر سے کھلاڑیوں نے نہ صرف یکجہتی بلکہ آنجہانی جارج کے اہل خانہ کی مدد کا اعلان بھی کیا۔

معروف ویسٹ انڈینز بلے باز گرس گیل نے بھی جارج فلوئیڈ سے متعلق سوشل میٖڈیا پر اپنے تاثرات کا اظہار کیا۔ گیل کا کہنا تھا کہ نسلی تعصب کھیل میں بھی موجود ہے، کرکٹ کھیلتے ہوئے انہیں بھی کئی بار ایسے رویے کا سامنا کرنا پڑا۔ کرس گیل نے مزید کہا کہ وہ خود بھی نسلی تعصب کا نشانہ بنتے رہے ہيں۔

انگلش کرکٹ بورڈ نے ٹوئٹر ہينڈل پر تصوير شيئر کرکے لکھا کہ ہم نرگ نسل کی قید سے آزاد معاشرے پر یقین رکھتے ہیں، ہم نسل پرستی کيخلاف متحد ہيں۔

معروف باکسر باکسر فلوئيڈ مے ويدر نے بھی آنجہانی جارج فلوئيڈ کی آخری رسومات کے تمام اخراجات اٹھانے کا اعلان کرديا۔ دنیا بھر میان کرونا وائرس کے باعث لاک ڈاؤن کی صورت حال ختم ہونے پر فٹبال کھلاڑيوں نے ٹريننگ سيشن کے شروع ہونے پر بھی جارج فلائیڈ سے میچز کے دوران يکجہتی کا اظہار کیا۔

جرمنی میں جاری فٹبال لیگ میں شریک کھلاڑیوں نے بھی امریکی سیاہ فام باشندے جارج فلائیڈ کو انصاف دلانے کےلیے آواز بلند کردی۔ بنڈس لیگا کےمیچ میں بورشیا ڈورٹمنڈ کے جیڈن سانچو نے پہلے گول کرنے پر شرٹ اتاری تو جرسی پر جارج فلائیڈ کے حق میں نعرہ درج تھا۔

ٹیم کے ایک اور کھلاڑی آرچرف حکیمی نے بھی ٹیم شرٹ کے نیچے جو جرسی پہنی تھی اس پر جارج فلائیڈ کے لیے نعرہ لگا تھا۔ میچ میں بورشیا ڈورٹمنڈ نے پیڈربورن کو ایک کے مقابلے میں چھ گول سے شکست دی۔

مونچن گلیڈبیخ میں کھیلے گئے میچ میں بھی کھلاڑیوں نے اسی طرح کے نعرے لکھے ہوئے جرسی پہنی ہوئی تھی۔

Unity is strength #BlackLivesMatter pic.twitter.com/xyZ5108kOH

— Andy Robertson (@andrewrobertso5) June 1, 2020 معروف انگلش فٹ بال کلب لیورپول نے بھی جارج فلائیڈ کو انصاف دلانے میں اپنی آواز شامل کی۔ ٹیم کے کھلاڑیوں نے سیشن سے قبل میدان میں گھٹنے سے بیٹھ کر جارج سے عقیدت کا اظہار کیا۔

دوسری جانب ٹاپ پلیئرز لوئس ہملٹن، مائیکل جارڈن سمیت دیگر کھلاڑیوں نے امریکا میں بڑھتی نسل پرستی پر سنجیدہ سوالات اٹھا دئیے۔

#BlackLivesMatter pic.twitter.com/sBAP5vxLSh

— Lewis Hamilton (@LewisHamilton) May 30, 2020 I wanted to take a moment to acknowledge my dad, a strong and successful black man. Because of him, both @nicolashamilton and I have careers, strong mindedness and determination. He has always been my hero. Happy 60th Birthday dad🖤 #blackexcellence #happybirthday pic.twitter.com/CHBnbq0TjG

— Lewis Hamilton (@LewisHamilton) May 31, 2020 موٹر اسپورٹس سے منسلک اور 6 بار کے عالمی فارمولا ون چیمپئن لوئس ہملٹن کا کہنا تھا کہ مجھے معلوم ہے موٹر اسپورٹس سے منسلک زیادہ تر افراد سفید فام ہیں، آپکی خاموشی سمجھ آتی ہے لیکن یہ بہت تکلیف دہ امر ہے۔ برطانوی ڈرائیور کا کہنا تھا وہ نسلی امتیاز کا مقابلہ کرنے کی کوشش میں خود کو تنہا محسوس کر رہے ہیں۔

Can we get this picture going around?? Rest easy George Floyd 💜 pic.twitter.com/4KqYha76NT

— ✨Taya La Bruja✨ (@triniricanbruja) May 30, 2020 سابق لیجنڈری امریکی باسکٹ بال پلیئر مائیکل جارڈن نے بھی جارج فلائیڈ کی ہلاکت پر غصے کا اظہار کرتے ہوئے لکھا اپنے ملک میں پروان چڑھتے نسلی امتیاز کو دیکھ کر بہت غمزدہ ہوں، بس بہت ہوگیا، اب اسکے خلاف موثر آواز اٹھانا ہوگی۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More