شادی ہالز ایسوسی ایشن نے حکومتی فیصلہ مسترد کردیا

سماء نیوز  |  Aug 06, 2020

شادی ہال مالکان نے حکومتی فیصلہ مسترد کردیا۔ ایسوسی ایشن کے صدر رانا رئیس کا کہنا ہے کہ حکومت شادی ہالز 15 ستمبر سے کھولنے کے فیصلے پر نظر ثانی کرے، ہمیں 10 اگست سے شادی ہالز کھولنے کی یقین دہانی کرائی تھی تھی۔

وفاقی وزیر اسد عمر نے این سی او سی اجلاس کے بعد کرونا وائرس کی وباء کے باعث لگائی گئی پابندیوں میں نرمی کا اعلان کیا تھا، انہوں نے بتایا تھا کہ جبکہ ریسٹورانٹس، پبلک اور امیوزمنٹ پارکس بھی 10 اگست سے کھولنے کا اعلان کردیا۔

شادی ہالز ایسوسی ایشن نے 15 ستمبر سے شادی ہالز کھولنے کا حکومتی  فیصلہ مسترد کردیا۔ صدر شادی ہالز ایسوسی ایشن رانا رئیس نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہمیں حکومت کی جانب سے 10 اگست کو شادی ہال کھولنے کی یقین دہانی کروائی گئی تھی، حکومت شادی ہال کو 15 ستمبر کو کھولنے سے متعلق فیصلے پر نظرثانی کرے۔

رانا رئیس کا کہنا ہے کہ کرونا وائرس کی وباء کے باعث لاک ڈاؤن کے نتیجے میں شادی ہال مالکان پہلے ہی معاشی طور پر تباہ ہوچکے ہیں، ریسٹورانٹ کو کھولنے کی اجازت کے بعد شادی ہال کو ستمبر میں اجازت دینا سمجھ سے باہر ہے۔

ایسوسی ایشن کے صدر نے ریسٹورانٹ میں شادی کی اجازت کی مذمت کرتے ہیں، جب ریسٹورانٹ کو شادیوں کی اجازت مل سکتی ہے تو ہم نے کیا قصور کیا ہے۔

رانا رئیس نے وزیراعظم عمران خان اور وفاقی وزیر اسد عمر سے پُر زور اپیل کی کہ شادی ہالز کو اگست میں کھولنے کی اجازت دی جائے، ہمارا مزدور طبقہ بیروزگاری سے تنگ آچکا ہے، حکومتی فیصلے سے شادی ہال مالکان دیوالیہ ہوجائیں گے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More