کے الیکٹرک کا صنعتی علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بڑھانے کا عندیہ

ہم نیوز  |  Sep 22, 2020

کراچی: شہر قائد میں بجلی تقسیم کرنے والی کمپنی کے الیکٹرک نے صنعتی علاقوں میں لوڈشیڈنگ کا دورانیہ بڑھانے کا عندیہ دے دیا ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق گیس سپلائی میں کمی کے باعث صنعتی علاقوں میں لوڈ شیڈنگ بڑھنے کا خدشہ ہے۔ کم گیس پریشر کے باعث بجلی کی پیداواری صلاحیت متاثر ہو رہی ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق مجموعی طور پر 400 میگاواٹ بجلی کی فراہمی متاثر ہے۔ سائٹ اور کورنگی سمیت گیس پر چلنے والے پاور پلانٹس سے بجلی کی پیداوار متاثر ہوئی ہے۔

ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق فرنس آئل پر چلنے والے پاور پلانٹس پوری استعداد پر چل رہے ہیں۔ کچھ عرصے کیلئے حکومت سے آر ایل این جی کی فراہمی کی درخواست کی گئی ہے۔

دوسری جانب شہر قائد میں بجلی کی بحران شدت اختیار کر گیا۔ بجلی کی طلب و رسد میں 600 میگاواٹ کا فرق پیدا ہو گیا۔

یہ بھی پڑھیں: 

نمائندہ ہم نیوز کے مطابق کراچی کے رہائشی علاقوں میں بجلی کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 12 گھنٹے تک پہنچ گیا ہے جبکہ کورنگی کے مختلف علاقوں میں 11 گھنٹے سے بجلی کی فراہمی معطل ہے۔

نیو کراچی، نارتھ کراچی، نارتھ کراچی، اورنگی ٹاؤن اور لیاقت آباد کے علاقے بجلی کی لوڈشیڈنگ سے زیادہ متاثر ہیں جبکہ بجلی کی طلب و رسد کا فرق 600 میگاواٹ تک چلا گیا ہے۔ کراچی میں بجلی کی موجودہ طلب 3 ہزار میگاواٹ ہے۔

ایس ایس جی سی کے ترجمان کا کہنا ہے کہ کے الیکٹرک کو معاہدے کے مطابق 190 سے 200 ملین مکعب فٹ گیس فراہم کی جا رہی ہے 50 اور 60 ملین مکعب فٹ گیس کی فراہمی اب ممکن نہیں ہے۔

دوسری جانب ترجمان کے الیکٹرک کا کہنا ہے کہ بن قاسم پاور پلانٹ کے بیشتر یونٹس کو فرنس آئل کے ذریعے چلایا جا رہا ہے گیس کی کمی کی وجہ سے کمبائن ری سائیکل پاور پلانٹ ہارون آباد کو چلانے میں دشواری کا سامنا ہے جو لوڈشیڈنگ کا سبب بن رہا ہے۔

شہر کے بیشتر علاقوں میں شدید لوڈشیڈنگ کی وجہ سے شہری شدید اذیت میں مبتلا ہیں اور رات 12 بجے کے بعد ہونے والی لوڈشیڈنگ شہریوں کے لیے دوہرا عذاب بن گئی ہے

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More