امریکا:سیاہ فام کےقتل پر کئی شہروں میں کرفیو کی خلاف ورزیاں

سماء نیوز  |  Jun 03, 2020

امریکا بھر میں نسلی تعصب کے خلاف احتجاج کا سلسلہ جاری ہے۔ کئی شہروں میں کرفیو نافذ ہے جبکہ احتجاج اور کرفیو کی خلاف ورزی پر درجنوں مظاہرین گرفتار بھی کرلئے گئے ہیں۔

امریکی میڈیا کے مطابق نیویارک شہر میں منگل کی رات مین ہیٹن برج پر ہزاروں مظاہرین موجود تھے۔ برج کے دونوں اطراف پولیس کی بھاری نفری تعینات تھی۔ یہ مظاہرین منگل کو دن میں بروکلین کے علاقے میں مظاہرہ کررہے تھے اور رات گئے تمام رکاوٹیں عبور کرکے یہاں جمع ہوئے۔ ان میں سے کچھ مظاہرین واپس بروکلین جانا چاہتے تھے لیکن اطراف میں موجود پولیس اہلکار انھیں گرفتار کرنےکےلیے پوری طرح تیار نظر آئے۔

ادھر لاس اینجلس کے میئر ایرک گارسیٹی کا کہنا ہے کہ انھیں شہر میں ہونے والے مظاہروں کے پرامن ہونے پر فخر ہے۔ انھوں نے کہا کہ یہ مظاہرین کا حق ہے کہ وہ اپنی بات پر امن انداز میں بیان کریں۔ شہر کی سڑکوں پر 1000 نیشنل گارڈز موجود ہیں اور شہر میں نقب زنی کی وارداتوں میں کمی آئی ہے۔ لاس اینجلس شہر میں مسلسل تیسری رات شام 6 بجے سے صبح 6 بجے تک کا کرفیو نافذ ہے۔

واشنگٹن میں بھی صورتحال بظاہر کنٹرول میں رہی اورمظاہرین لیفائٹ اسکوئر سے دور ہوتے دکھائی دئیے۔ امریکی میڈیا نے ایک رپورٹ میں بتایا ہے کہ پیر کو واشنگٹن کی سوان اسٹریٹ پر ہونے والے مظاہرے میں ہزاروں افراد پر امن انداز میں احتجاج کررہے تھے۔ اس دوران پولیس نے ان پر مرچوں والا اسپرے  اور دھکم پیل شروع کردی۔  صورتحال کی نزاکت جانتے ہوئے وہاں موجود ایک رہائشی نے اپنے گھر میں درجنوں مظاہرین کو پناہ دی۔ یہ افراد کئی گھنٹے تک یہاں رہے تاکہ پولیس کی گرفتاری سے بچاجاسکے۔

پولیس ڈپارٹمنٹ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ سوان اسٹریٹ پر کرفیو کی خلاف ورزی کی وجہ سے پولیس ایکشن ہوا اور 194 مظاہرین گرفتارکرلئے گئے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More