بیجنگ میں کوئی نیا کیس نہیں، امریکہ میں ہلاکتیں ایک لاکھ 30 ہزار

اردو نیوز  |  Jul 07, 2020

چین کے دارالحکومت بیجنگ میں گزشتہ 24 گھنٹون کے دوران  کورونا وائرس کا کوئی نیا کیس رپورٹ نہیں ہوا جب کہ امریکہ میں کووڈ-19 سے ہونے والی اموات کی تعداد ایک لاکھ 30 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔

بیجنگ میں شہری حکومت کے حکام کا کہنا ہے کہ پیر کو شہر میں کوروانا وائرس کا کوئی کیس سامنے نہیں آیا۔ ان کے مطابق ایک دن پہلے ایک کیس رپورٹ ہوا تھا۔

خیال رہے حالیہ دنوں میں بیجنگ میں کورونا وائرس کے کلسٹر کیسز سامنے آنے کے بعد چین میں وبا کی دوسری لہر کے حوالے سے خدشات بڑھ گئے تھے اور حکام نے مختلف مارکیٹیں اور علاقے سیل کرکے بڑے پیمانے پر ٹیسٹنگ شروع کیا تھا۔

مزید پڑھیںانڈیا میں ایک کروڑ ٹیسٹ، 19 ہزار ہلاکتیںNode ID: 490181کورونا دنیا میں کتنے لوگوں کو مار سکتا ہے؟ Node ID: 490301دو وباؤں کو شکست: 106 سالہ شخص کورونا سے صحت یابNode ID: 490311

 

دوسری جانب آسٹریلوی ریاست وکٹوریا میں کورونا پر قابو پانے کے لیے چار ہفتوں کے لیے لاک ڈاؤن پر غور ہو رہا ہے۔ خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق وکٹوریا کے پرائم منسٹر ریاست میں چار ہفتے کا لاک ڈاؤن نافذ کرنے پر غور کر رہے ہیں۔

آسٹریلیا میں کورنا وائرس کے کیسز میں اضافے کے بعد ریاسٹ وکٹوریا اور نیو ساؤتھ ویلز کے درمیاں بارڈر کو بھی بند کیا گیا ہے۔ روئٹڑز کے مطابق سو سال کے دوران یہ پہلی مرتبہ ہے کہ وکٹویا اور نیو ساؤتھ ویلز کے درمیان بارڈر بند کیا گیا ہے۔

جان ہاپکنز یونیورسٹی کے اعداد و شمار کے مطابق امریکہ میں کووڈ۔19 سے ہونے والی اموات کی تعداد اب 1 لاکھ 30 ہزار سے تجاوز کر گئی ہے۔

امریکہ میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد اب برازیل میں ہلاک ہونے والوں سے دو گنا سے بھی زیادہ ہے۔ خیال رہے برازیل کورونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والے ممالک میں امریکہ کے بعد دوسرے نمبر پر ہے۔

امریکہ میں کورونا سے اب تک 29 لاکھ  سے زائد افراد متاثر ہوئے ہیں۔

جون کے مہینے میں امریکہ میں کورونا کیسز کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوا (فوٹو: اے ایف پی)امریکہ میں ریاست نیویارک میں سب سے زیادہ اموات ہوئیں جو کہ 32 ہزار ہیں، لیکن اب جنوبی ریاستوں میں بھی تصدیق شدہ متاثرین کی تعداد بڑھتی جا رہی ہے۔

امریکہ اموات اور کیسز دونوں کے حوالے سے کورونا سے سب سے زیادہ متاثر ہونے والا ملک ہے۔ امریکہ میں جون کے مہینے میں کورونا وائرس کے کیسز میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے جس کے بعد کئی ریاستوں نے مرحلہ وار لاک ڈٓؤن میں نرمی کے منصوبے کو ترک کر دیا ہے۔

امریکہ میں جب اموات کی تعدا ایک لاکھ سے تجاوز کر گئی تو اس وقت صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے اطمینان کا اظہار کیا تھا کہ کورونا کے کیسز کم ہورہے ہیں۔ تاہم اس وقت بھی ماہرین نے خبردار کیا تھا کہ امکانی طور پر وائرس دوبارہ سر اٹھا سکتا ہے۔

کیسز میں اضافے کے باوجود وائٹ ہاؤس کے حکام کا کہنا ہے کہ امریکی معیشت کو دوبارہ بند نہیں کیا جائے گا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More