اسلام عورت کو بہترین معاشی و معاشرتی اسٹیٹس دیتا ہے، لیکن بدقسمتی سے جہالت کی وجہ سے خواتین کو ان کے حقوق نہیں دیے جاتے۔نصراللہ رندھاوا

روزنامہ اوصاف  |  Mar 08, 2021

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) امیر جماعت اسلامی ضلع اسلام آباد نصر اللہ رندھاوہ نے کہا ہے کہ اسلام عورت کو بہترین معاشی و معاشرتی اسٹیٹس دیتا ہے، لیکن بدقسمتی سے ہمارے معاشرے میں جہالت کی وجہ سے خواتین کو ان کے حقوق نہیں دیے جاتے۔ ملک میں اسلامی نظام کا نفاذ اس جہالت کا خاتمہ کر کے عورت کے جائز حقوق یقینی کی فراہمی یقینی بنائے گا۔ وہ پیر کے روز حلقہ خواتین جماعت اسلامی کے زیر اہتمام دفتر جماعت اسلامی واقع میلوڈی اسلام آباد کے سامنے منعقدہ ”خواتین واک“ سے خطاب کر رہے تھے۔ واک میں حلقہ خواتین کی عہدے داروں سمیت کثیر تعداد میں خواتین نے شرکت کی۔ نصر اللہ رندھاوہ کا کہنا تھا کہ حضور نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے عورت کو وراثت میں حصہ دیا، ایک بلند مقام عطا فرمایا۔ محمدمصطفی صلی اللہ علیہ وسلم کے نظامحکومت میں خواتین سے مشاورت بھی ہوتی تھی اور نظام حکومت میں خواتین شریک ہوتی تھیں۔انہوں نے کہا کہ آج دنیا کے دجالی نظام کا پہلا وار عورت اورہمارے خاندانی نظام پر ہے۔ عورت نے ہمارے خاندانی نظام کو سنبھال رکھا ہے اور اسے ایک مقام عطا کیا ہے۔ پاکستان کی 52فیصد آبادی خواتین پر مشتمل ہے اور اس تناسب سے تعلیم کے خاطر خواہ ادارے موجود نہیں ہیں، لہٰذا حکومت وقت کی ذمہ داری ہے کہ وہ خواتین کی تعلیم کا آئینی وعدہ پورا کرے۔ واک کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے حلقہ خواتین کی ڈپٹی سیکرٹری جنرل سکینہ شاہد کا کہنا تھا کہ ایک مثالی اسلامی معاشرے کی بنیاد اسی وقت ڈالی جا سکتی ہے جب خاندان کی اکائی مضبوط اور مستحکم بنائی جائے اور اس کے لیے خواتین کو معاشی اور معاشرتی تحفظ فراہم کرنا بنیادی شرط ہے۔انہوں نے کہا کہ نکاح ایک معاہدے کا نام ہے جس میں کوئی کسی کا محکوم نہیں بنتا، بلکہ دونوں فریق مشترکہ کوششوں کے ذریعے اپنی اپنی ذمہ داریوں کو نبھاتے ہیں اور یوں ایک خاندان کی تشکیل کرتے ہیں جو معاشرے کی ایک بنیادی اکائی ہے۔ خاندان کی اکائی اسی وقت مضبوط ہو گی جب خاندان کے بنیادی اجزا، یعنی مرد اور عورت تقویٰ اختیار کریں۔ سابق ایم این اے اور نگران شعبہ تعلقات عامہ عائشہ سید نے اپنی گفتگو میں کہا کہ اللہ تعالیٰ نے مرد کو قوام بنایا ہے، لیکن اس کا یہ مطلب نہیں کہ مرد کو مطلق فضیلت حاصل ہے۔ بلکہ اس کا مطلب یہ ہے کہ فطرت نے مرد کو ہی یہ صلاحیت دی ہے کہ وہ سربراہی کر سکتا ہے۔ معاشرے کی تعمیر و تشکیل میں اور انسانیت کی خدمت کے حوالے سے مرد و عورت دونوں کی شراکت یکساں ہے۔ دل و دماغ، عقل و جذبات اور خواہشات و بشری ضروریات کے اعتبار سے دونوں برابر ہے۔ انہوں نے کہا کہ ایک صالح معاشرے کے قیام کے لیے ضروری ہے کہ مردوں کی طرح خواتین کو بھی اپنی فطری صلاحیت اور استعداد کے مطابق زیادہ سے زیادہ ترقی کا موقع فراہم کیا جائے۔سابق ایم این اے بلقیس سیف کا کہنا تھا کہ اسلام اور مغرب کی خاندان کی بنیادی تعریف میں اختلاف ہے۔ مغربی معاشرے میں شادی دو افراد کے مابین معاہدے کا نام ہے، جبکہ اسلام میں نکاح دو افراد کے رشتے کی بجائے دو خاندانوں کے باہم جڑنے کا ذریعہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج ہمارے معاشرے میں خواتین اپنے حقوق کا مطالبہ کر رہی ہیں تو اس کی وجہ معاشرے میں رائج وہ ظلم ہے جس نے خواتین کو ان حقوق سے محروم کر رکھا ہے جو اسے اسلام کا آفاقی نظام عطا کرتا ہے۔ نائب ناظمہ شمالی پنجاب نذہت بھٹی نے اپنے خطاب میں کہا خواتین کے حقوق کی فراہمی اور ان کی ترقی، صحت اور تفریح اتنی ہی ضروری ہے جتنی یہ چیزیں مردوں کے لیے ضروری ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی بے یہ چیز باقاعدہ ایجنڈے کے تحت اپنے منشور میں شامل کی ہے کہ جماعت خواتین کی تعلیم و تربیت کے لیے خواتین یونیورسٹیوں کا قیام عمل میں لائے گی، خواتین کے لیے صحت کی الگ سہولیات، کھیلوں کے میدان، جم وغیرہ بنائے جائیں گے تاکہ وہ باپردہ ماحول میں آزادی سے اپنی تعلیم و تفریح کی ضروریات پوری کر سکیں۔ ناظمہ ضلع اسلام آباد نصرت ناہید کا اس موقعے پر کہنا تھا کہ اسلام عورت کو پابند نہیں کرتا، بلکہ اس کے لیے دائرہ کار متعین کرتا ہے جس میں رہتے ہوئے اپنی ذمہ داریاں ادا کرنے میں ہی اس کی بھلائی ہے۔ اللہ تعالیٰ نے عورت اور مرد کے حقوق میں جو لکیر کھینچی ہے، اگر مردو خواتین اسے کافی سمجھیں تو آزادی نسواں کے لیے نعرے بازی کی ضروری ہی باقی نہ رہے۔ اس موقعے پر ہم آپ سب سے مطالبہ کرتے ہیں کہ آپ سب جماعت اسلامی کی اسلامی نظام کی جدو جہد میں اس کا ساتھ دیں تاکہ ایک ایسا معاشرہ وجود میں آئے جہاں ریاست مظلوم کا ساتھ دے نہ کہ ظالم کے ہاتھ مضبوط کرے
مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More