انگلینڈ اور پاکستان کے درمیان راولپنڈی ٹیسٹ کا شیڈول کے مطابق آغاز: مہمان ٹیم کی بیٹنگ جاری

بی بی سی اردو  |  Dec 01, 2022

Getty Images

پاکستان اور انگلینڈ کے درمیان راولپنڈی میں پہلا ٹیسٹ میچ آج دن 10 بجے شیڈول کے مطابق شروع ہو گا۔ یہ فیصلہ جمعرات کی صبح اس وقت سامنے آیا جب انگلینڈ کرکٹ حکام نے پاکستان کرکٹ بورڈ کو مطلع کیا کہ میڈیکل پینل کے مشورے کے بعد وہ اس پوزیشن میں ہیں کہ 11 فٹ کھلاڑی میدان میں اتارے جا سکتے ہیں۔

گذشتہ روز انگلینڈ کی ٹیم کے متعدد کھلاڑی وائرس میں مبتلا ہو گئے تھے جس کے پیش نظر میچ شروع کرنے کا فیصلہ بدھ کی رات کو کرنے کے بجائے جمعرات کی صبح تک مؤخر کر دیا تھا۔

یاد رہے کہ راولپنڈی میں سیریز کے پہلے ٹیسٹ میچ سے صرف ایک دن قبل پاکستان کے دورے پر آئی ہوئی انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے آٹھ کرکٹرز وائرس کا شکار ہو گئے تھے جن میں ٹیم کے کپتان بین سٹوکس بھی شامل تھے۔

انگلینڈ کے کھلاڑیوں کے بیمار پڑنے کی خبر سامنے آنے کے بعد پاکستان کرکٹ بورڈ نے کہا تھا کہ چونکہ انگلینڈ کے متعدد کھلاڑی وائرل انفیکشن کا شکار ہیں اس لیے وہ راولپنڈی ٹیسٹ سے قبل انگلینڈ کرکٹ بورڈ سے رابطے میں ہیں اور اس سلسلے میں تازہ ترین اپ ڈیٹ سے جمعرات کی صبح کیا جائے گا۔

گذشتہ روز انگلینڈ کرکٹ بورڈ کی طرف سے جاری کردہ بیان میں صرف یہ کہا گیا تھا کہ انگلینڈ کی ٹیم کی بدھ کے روز آپشنل پریکٹس تھی جس میں ہیری بروک، جو روٹ، کیٹن جیننگز، اولی پوپ اور زیک کرالی نے حصہ لیا اور یہ کہ ٹیم کے متعدد کھلاڑی جن میں کپتان بین سٹوکس بھی شامل ہیں طبعیت بہتر نہ ہونے کی وجہ سے ہوٹل میں آرام کر رہے ہیں جس کی انھیں ہدایت کی گئی تھی۔

پاکستان اور انگلینڈ کی ٹیمیں اسلام آباد کے ایک ہی ہوٹل میں ٹھہری ہوئی ہیں۔

اس وائرس کی نوعیت اب تک معلوم نہیں ہو سکی ہے لیکن بتایا گیا ہے تھا کہ یہ علامات کورونا کی نہیں ہیں بلکہ یہ کھلاڑی پیٹ کی تکلیف میں مبتلا ہوئے ہیں۔

واضح رہے کہ انگلینڈ کی کرکٹ ٹیممراکش سے تعلق رکھنے والا شیف عمر مزیان بھی اپنے ساتھ اس دورے پر لائی ہے جو ٹیم کے کھانے پینے کے معاملات کی نگرانی کررہے ہیں۔

توقع کی جا رہی تھی کہ یہ کھلاڑی اگلے 24 گھنٹے میں صحت یاب ہو جائیں گے۔

یہ بھی پڑھیے

انگلینڈ کرکٹ ٹیم کے شیف عمر مزیان کون ہیں اور ٹیم انھیں اپنے ساتھ کیوں لائی ہے؟

پاکستان ٹیم میں شامل’مسٹری سپنر‘ ابرار احمد جن کی ’انگلیوں میں بہت جان ہے‘

ہیلز اور کمنز کا آئی پی ایل کھیلنے سے انکار: ’کرکٹرز کے لیے آرام بھی ضروری‘

انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم کے بیٹسمین جو روٹ نے بدھ کے روز میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا تھا کہ یہ فوڈ پوائزننگ یا کورونا کا معاملہ نہیں ہے اور امید ہے کہ کھلاڑی جلد خود کو بہتر محسوس کریں گے۔

انھوں نے کہا تھا کہ یہ کہنا مشکل ہے کہ کھلاڑی پہلے ٹیسٹ سے قبل مکمل فٹ ہو جائیں گے لیکن وہ اس کے لیے کوشش ضرور کریں گے۔

جو روٹ کا کہنا تھا کہ غیر ملکی ٹورز کے دوران انجریز اور بیماری جیسی صورتحال پیدا ہو جاتی ہے۔

جو روٹ سے جب یہ سوال کیا گیا کہ اگر بین سٹوکس نہیں کھیلتے تو کیا وہ دوبارہ انگلینڈ کی قیادت کرنے کے لیے تیار ہیں جس پر ان کا جواب تھا میرا نہیں خیال۔

جو روٹ کو امید ہے کہ اس سیریز میں اچھی کرکٹ کھیلی جائے گی اور ان کی ٹیم اس تسلسل کو برقرار رکھے گی جو وہ پچھلی چند سیریز میں قائم کر چکی ہے۔

’ہماری سوچ واضح ہے کہ سمارٹ کرکٹ کھیلنی ہے، تیز کھیلنا ہے اور وکٹیں لینی ہیں۔‘

جو روٹ کا کہنا ہے کہ اگر آپ کو ٹاپ ٹیم بننا ہے تو اس کے لیے ہر کنڈیشنز میں جیتنا ضروری ہے۔

انگلینڈ کے کرکٹرز کے وائرس میں مبتلا ہونے کی وجہ سے سیریز کی ٹرافی کی تقریب رونمائی بھی ملتوی کر دی گئی۔ اب یہ تقریب میچ شروع ہونے سے قبل منعقد ہو گی۔

انگلینڈ کی کرکٹ ٹیم سترہ برس کے طویل عرصے کے بعد ٹیسٹ سیریز کھیلنے پاکستان آئی ہے۔ اس نے پہلے ٹیسٹ کے لیے اپنے سکواڈ کا اعلان بھی کر دیا تھا جس میں بین سٹوکس (کپتان)، زیک کرالی، بین ڈکیٹ، اولی پوپ، جو روٹ، ہیری بروک، بین فوکس، لیئم لونگسٹن، اولی رابنسن، جیک لیچ اور جیمز اینڈرسن شامل ہیں۔

لیئم لونگسٹن اپنے ٹیسٹ کریئر کا آغاز کریں گے جبکہ بین ڈکیٹ چھ سال بعد پہلا ٹیسٹ کھیلیں گے۔ وہ آخری مرتبہ 2016ء میں بھارت کے خلاف ٹیسٹ کھیلے تھے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More