اداکار فہد مصطفیٰ کا پولیو ورکرز کو خراج تحسین

بول نیوز  |  Jul 10, 2020

پاکستان کے معروف اداکار و میزبان فہد مصطفیٰ نے پولیو رضاکاروں کے لیے خصوصی ویڈیو پیغام جاری کیا  ہے۔

اداکار فہد مصطفیٰ کی جانب سے مائیکرو بلاگنگ سائٹ ٹوئٹر پرپولیو رضاکاروں کو خراجِ تحسین پیش کیا گیا ہے۔

اداکار نے ویڈیو پیغام بھی جاری کیا جس میں اُنہوں نے کہا کہ آپ سب یہ جانتے ہیں کہ پولیو رضاکاروں کی ٹیم دن رات محنت کرکے کورونا وائرس کے خلاف لڑ رہی ہے۔

Our polio workers are working to minimise the effects of the coronavirus because a healthy Pakistan is their greatest mission. Let play our part by vaccinating young children regularly against polio & other dangerous diseases to ensure for them a healthy, happy future. #EndPolio pic.twitter.com/GHuugQE7Sk

— Fahad Mustafa (@fahadmustafa26) July 8, 2020

فہد مصطفیٰ نے بتایا کہ پہلے یہ ٹیم پولیو کے خلاف لڑتی رہی اور اب عالمی وبا کورونا وائرس کے خلاف لڑ رہی ہے تاکہ اِس کے اثرات کو کم کیا جاسکے اور لوگوں کو اِس وائرس سے محفوظ رکھا جاسکے۔

اداکار نے بچوں کو پولیو ویکسین دلانے پر زور دیتے ہوئے کہا کہ کورونا وائرس کا خاتمہ اس لیے نہیں ہورہا ہے کیونکہ اس وائرس کی کوئی ویکسین نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ پولیو کی ویکسین موجود ہے لہٰذا تمام والدین کے لیے بےحد ضروری ہے کہ وہ اپنے بچوں کو پولیو کی ویکسین دلوائیں۔

دوسری جانب اُنہوں نے بتایا کہ کہ بحیثیت باپ میں نے ہمیشہ اپنے بچوں کو وقت پر پولیو کی ویکسین دلوائی تاکہ میرے بچے اِس مرض سے محفوظ رہ سکیں۔

اداکار فہد نے کہا کہ ناصرف پولیو کی ویکسین بلکہ دیگر بیماریاں بھی جن کی ویکسین موجود ہے وہ آپ اپنے بچوں کو ضرور دلوائیں تاکہ ہم اپنے ملک پاکستان کو پولیو جیسے دوسرے امراض سے بھی محفوظ رکھ سکیں۔

یاد رہے کہ دو روز قبل کراچی میں پولیو وائرس کا ایک اور کیس سامنے آیا، 5 سالہ بچے میں پولیو وائرس کی تصدیق ہوئی ہے جس کے بعد رواں سال اب تک سندھ میں پولیو وائرس سے متاثرہ بچوں کی تعداد 19 جبکہ ملک بھر میں 57 ہوگئی ہے۔

واضح رہے کہ اداکار فہاد نے اختتام میں کہا کہ اِس ضمن میں ہمارے لیے ضروری ہے کہ ہم اپنا ایک اہم کردار ادا کریں اور پولیو ٹیم کا ساتھ دیں۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More