روس کا کرونا وائرس کی ویکسین تیار کرنے کا دعویٰ

وائس آف امریکہ اردو  |  Aug 11, 2020

ویب ڈیسک — 

روس کے صدر ولادی میر پوٹن نے دعویٰ کیا ہے کہ روس کرونا وائرس کےخلاف نئی ویکسین کے استعمال کی باضابطہ اجازت دینے والا دنیا کا پہلا ملک بن گیا ہے۔ تاہم صدر نے اپنے دعوے سے متعلق کوئی مستند ڈیٹا پیش نہیں کیا کہ یہ ویکسین کس حد تک محفوظ ہے۔

روسی صدر نے منگل کو حکومتی وزرا سے ملاقات کے بعد سرکاری ٹی وی پر براہ راست نشر ہونے والی تقریر میں اس پیش رفت سے آگاہ کیا۔

صدر پوٹن نے کہا کہ "میں جانتا ہوں کہ ماسکو کے گیمیلیا انسٹی ٹیوٹ کی تیار کردہ یہ ویکسین فوری اثر کرتی ہے اور اس سے کرونا کے خلاف قوات مدافعت ملتی ہے۔"

روسی صدر کا کہنا تھا کہ ویکسین کی منظوری تمام ضروری مراحل پورے کرنے کے بعد دی گئی ہے اور یہ بالکل محفوظ ہے۔

اُنہوں نے بتایا کہ اُن کی اپنی بیٹی کو ہلکے بخار کی علامات پر یہ ویکسین دی گئی اور اگلے ہی روز بخار اُتر گیا۔

نئی ویکسین کا نام 'اسپتنک فائیو' رکھا گیا ہے جو 1957 میں اس وقت کے سوویت یونین کی جانب سے خلا میں بھیجا جانے والا پہلا مشن تھا۔

ایڈوب فلیش پلیئر حاصل کیجئےEmbedshareامریکی قصبہ جہاں کرونا وائرس کا کوئی مریض نہیںEmbedshareThe code has been copied to your clipboard.widthpxheightpxفیس بک پر شیئر کیجئیے ٹوئٹر پر شیئر کیجئیے The URL has been copied to your clipboardNo media source currently available

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More