جموں و کشمیر بڑی جیل قرار، بھارتی راجیہ سبھا کے رکن پی چدم برم نے مودی سرکار کو آئینہ دکھا دیا

سچ ٹی وی  |  Aug 02, 2020

تفصیلات کے مطابق بھارت کے سابق وزیر اور موجودہ رکن راجیہ سبھا پی چدم برم نے دلی سرکار پر کڑی تنقید کی ہے، لکھا 5 اگست کے اقدام سے دلی جو کچھ حاصل کرنا چاہتا تھا، کچھ بھی حاصل نہ کر سکا۔

سابق بھارتی وزیر پی چدم برم نے ایک آرٹیکل میں کہا ہے کہ 5 اگست کو کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد کشمیریوں کی آواز دبانے اور آزادی کی تحریک کو کچلنے کے لیے ہر ممکن قدم اٹھایا گیا، اور کشمیر کو ایک بڑی جیل میں تبدیل کر دیا گیا۔

انھوں نے لکھا کہ مقبوضہ کشمیر ایک بڑی جیل ہے، بنیادی حقوق معطل ہیں، آزادی کے جذبے کو کچلنے کے لیے سیکورٹی آپریشن معمول ہیں لیکن پھر بھی مودی سرکار مقاصد حاصل کرنے میں ناکام ہے۔

پی چدم برم نے لکھا کہ مودی سرکار پانچ اگست کے اقدام سے کوئی نتائج حاصل نہیں کر سکی جو کہ افسوس ناک ہار ہے۔

واضح رہے کہ پبلک سیفٹی ایکٹ، ان لا فل ایکٹیوٹی ایکٹ نافذ ہونے کے بعد مقبوضہ وادی میں بڑے پیمانے پر سرچ آپریشنز جاری ہیں، جب کہ آزاد میڈیا کے لیے کشمیر میں کوئی جگہ نہیں ہے، مودی سرکار کے اقدام سے کشمیر ویلی میں 40 ہزار کروڑ کا نقصان ہو چکا ہے، 4 لاکھ 97 ہزار افراد بے روزگار ہوئے، گزشتہ سال تک سیاحوں کی آمد 3 لاکھ سے اوپر تھی جو کم ہو کر 43 ہزار رہ گئی ہے۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More