میسی اور رونالڈو ایک دہائی بعد دوڑ سے باہر

سماء نیوز  |  Sep 28, 2020

فوٹو: اے ایف پی

اگر فٹبال کے کسی ایوارڈ کیلئے نامزدگی ہو تو یہ ممکن نہیں کہ ان ایوارڈز کیلئے فیورٹ کھلاڑیوں میں دور حاضر کے  کرشمہ ساز فٹبالرز لیونل میسی اور کرسٹیانو رونالڈو کا نام شامل نہ ہو۔ لیکن 2010 کے بعد پہلی بار ایسا ہوا کہ یونین آف یورپیئن فٹبال ایسوسی ایشنز (یوایفا) کے سال کے بہترین فٹبالر اور بہترین فارورڈ کیلئے شارٹ لسٹ کیے گئے تین ٹاپ کھلاڑیوں میں ان دونوں سپر اسٹارز میں سے کسی کا بھی نام شامل نہیں ہے۔ سال 2019-20 کے بہترین یورپی فٹبالر ایوارڈ کیلئے بائرن میونخ اور جرمنی کے کپتان مینوئل نوئیر، بائرن کے پولش اسٹار لیوانڈوسکی اور بلجیئم سے تعلق رکھنے والے مانچسٹر سٹی کے کیون ڈی بروئنے میں مقابلہ ہے۔ یوایفا کے سال کے بہترین فٹبالر اور مختلف پوزشنز کیلئے بہترین کھلاڑیوں کے ناموں کا اعلان اور ایوارڈ دینے کی تقریب یکم اکتوبر کو ہوگی جب چیمپئنز لیگ کے مین راؤنڈ کے ڈراز یوایفا کے ہیڈ کوارٹرز نیون سوئیزرلینڈ میں نکالے جائیں گے۔

گزشتہ 10 برسوں میں یہ پہلا موقع ہے کہ میسی اور رونالڈو کو یوایفا کے سال کے بہترین فٹبالر اور بہترین فارورڈ دونوں کیٹیگری کیلئے ٹاپ تھری کھلاڑیوں میں کوئی جگہ نہیں مل سکی۔ یوایفا کے سیزن 2019-20 کیلئے ٹیم کی ہر پوزیشن اور سال کے بہترین فٹبالر کیلئے تین تین کھلاڑیوں کا انتخاب کیا گیا تھا جس کیلئے جیوری میں شامل یوایفا چیمپیئنز لیگ اور یورپا لیگ کے گروپ مراحل میں حصہ لینے والی 80 ٹیموں کے کوچز اور یوایفا کے رکن 55 ملکوں میں سے ہر ایک ملک سے ایک ایک میڈیا نمائندے نے ووٹ دیئے اور اعزاز کیلئے فیورٹ کھلاڑیوں کو شارٹ لسٹ کیا۔ ان میں سے 32 کوچز کا تعلق چیمپنز لیگ اور 48 کا یورپا لیگ سے ہے۔ رولز کے تحت کوئی بھی کوچ اپنی ٹیم کے کھلاڑی کو ووٹ نہیں دے سکتا تھا۔ ووٹنگ کے مراحل سے گزرنے کے بعد یو ایفا کے سال کے بہترین فٹبالر کے لیے جن ٹاپ 10 کھلاڑیوں کے نام سامنے آئے ان میں حیران کن طور پر رونالڈو اور میسی شامل نہیں تھے بلکہ رونالڈو کو بہت کم ووٹ ملے اور وہ ٹاپ 10 کی اس ٹیبل میں آخری نمبر پر آئے اور انہیں صرف 25 ووٹ مل سکے۔ ووٹنگ میں نمبر 1کھلاڑی کیلئے پانچ نمبر 2 کھلاڑی کیلئے تین اور نمبر 3 کیلئے ایک پوائنٹ تھا۔

یو ایفا کی جیوری نے گزشتہ روز ٹاپ 10 کھلاڑیوں کو ملنے والے ووٹوں کا اعلان کیا لیکن تین ٹاپ کھلاڑیوں کو ملنے والے ووٹوں کو مخفی رکھا گیا۔ سال کے بہترین فٹبالر کیلئے تین کھلاڑیوں بائرن میونخ کے گول کیپر مینوئل نوئر، بائرن ہی کے فارورڈ  لیوانڈوسکی اور مانچسٹر سٹی کے اسٹار ڈی بروئنے میں مقابلہ ہے۔ نوئر اور لیوانڈوسکی نے جرمن فٹبال کلب کو چیمپئنز لیگ جتوانے میں مزکری کردار ادا کیا جبکہ ڈی بروئنے اپنے مانچسٹر سٹی کو گزشتہ سال انگلش پریمیئر لیگ میں لیورپول کے بعد سیکنڈ پوزیشن پر پہنچانے میں انتہائی موثر ثابت ہوئے تھے گو کہ ان کا کلب چیمپئنز لیگ کے کوارٹر فائنل میں شکست سے دوچار ہو گیا تھا۔ سال کے بہترین فٹبالر اور مختلف پوزیشن کیلئے بہترین کھلاڑیوں میں جرمن فٹ بال کلب کو بالادستی حاصل ہے جس کے سات فٹبالرز کو ووٹنگ مرحلے کے بعد چنا گیا ہے۔ نوئر بہترین گول کیپر کیٹیگری میں ایوارڈ کیلئے بھی پیرس سینٹ جرمین کے کیلر نواس اور ایٹلیٹیکو میڈرڈ کے جان اوبلک کے ساتھ امیدوار ہیں۔

فٹبالر آف دی ائر کیلئے 10 شارٹ لسٹ کھلاڑیوں میں بارسلونا کے ارجنٹائنی سپر اسٹار لیونل میسی اور پیرس سینٹ جرمین کے برازیلین فٹبالر نیمار 53، 53 ووٹ کے ساتھ چوتھے نمبر پر آئے۔ بائرن میونخ کے جرمن فٹبالر تھامس مولر 41 ووٹ کے ساتھ چھٹے اور فرانسیسی کلب پیرس سینٹ جرمین کے کلیان ایمباپے، 39 ووٹ ساتویں، بائرن میونخ کے تھیاگو الکانٹرا 27 ووٹ آٹھویں، بائرن میونخ کے جوشوا کمچ 26 ووٹ نویں اور یوونٹس کے پرتگالی سپر اسٹار کرسٹیانو رونالڈو 25 ووٹ کے ساتھ ٹاپ 10 کی ٹیبل میں آخری نمبر پر رہے۔ اس ایوارڈ کیلئے کھلاڑیوں کی نیشنلٹی سے بالاتر ہو کر ڈومیسٹک یا انٹرنیشنل سطح پر اپنے ملک اور فٹبال کلب کیلئے کارکردگی کو دیکھا جاتا ہے۔

جرمن فٹبال کلب بائرن میونخ نے گزشتہ سیزن میں ٹرپل کا اعزاز حاصل کیا۔ اس نے چیمپئنز لیگ جیتنے کے ساتھ ساتھ جرمن فٹبال لیگ بنڈس لیگا اور بی ڈی ایف کپ کو اپنے نام کیا تھا۔ بائرن میونخ نے چیمپئنز لیگ کے فائنل میں پیس سینٹ جرمین کو اعصاب شکن مقابلے کے بعد 1-0 سے زیر کیا تھا اور وہ پورے لیگ میں ناقابل شکست رہنے کے 100 فیصد ریکارڈ کے ساتھ ٹائٹل جیتنے والا پہلا فٹ بال کلب تھا۔ ٹیم کی اس شاندار کامیابی میں کپتان مینوئل نوئیر اور لیوانڈوسکی کا کردار سب سے نمایاں تھا۔ لیوانڈوسکی نے اس سیزن میں اپنے کلب کی نمائندگی کرتے ہوئے مجموعی طور پر 55 گول کیے جبکہ چیمپئنز لیگ میں وہ 15 گول کے ساتھ ٹاپ اسکورر رہے۔

بلجیئم سے تعلق رکھنے والے مانچسٹر سٹی کے فٹبالر ڈی بروئنے نے گزشتہ سال پریمیئر لیگ سیزن میں 16 گول کیے تھے اور 20 گول کرنے میں دوسرے ساتھی کھلاڑیوں کی معاونت کر کے تھیری آنری کا ریکارڈ برابر کیا تھا جو کہ یورپ میں سب سے بڑی ریکارڈ تعداد ہے۔ تاہم چیمپئنز لیگ اولمپک لیونیز کے ہاتھوں مانچسٹر سٹی کی باوجود ڈی بروئنے اپنی شاندار کارکردگی کی وجہ سے ٹاپ تھری میں جگہ بنانے میں کامیاب رہے۔ ڈی بروئنے دو برسوں میں یہ اعزاز حاصل کرنے والے پریمیئر لیگ کے دوسرے فٹبالر بن سکتے ہیں۔ لیور پول کے ڈیفنڈر ورجل وان ڈیجک نے یہ ایوارڈ 2019 میں لیور پول کو اپنی تاریخ میں چھٹی مرتبہ یورپی کپ جتوانے میں متاثر کن کارکردگی پیش کرتے ہوئے یہ اعزاز حاصل کیا تھا لیکن اس مرتبہ لیورپول کو ناک آؤٹ کے پہلے مرحلے میں ہی ہسپانوی کلب ایٹلیٹیکو میڈرڈ نے باہر کر دیا تھا۔

چیمپئنز لیگ میں کرسٹیانو رونالڈو کی کارکردگی غیر متاثر کن رہی تھی اور وہ 8 میچوں میں صرف تین گول کر سکے۔ ان کا اطالوی فٹبال کلب یوونٹس چیمپیئنز لیگ کے پری کوارٹر فائنل میں فرانسیسی کلب اولمپک لیون کے ہاتھوں غیر متوقع شکست کے بعد باہر ہوگیا تھا۔ کرسٹیانو رونالڈو نے تین مرتبہ 2013-14، 2015-16 اور 2016-17 میں یوایفا کے بہترین فٹبالر کا اعزاز اپنے نام کیا اور 2011-12 اور 2017-18 میں رنرز اپ رہے۔ یہ بات دل چسپ ہے کہ 2011-12ء میں  روایتی حریف رونالڈو اور میسی دونوں مشترکہ طور پر رنرز اپ رہے تھے۔ رونالڈو نے 2010-11، 2012-13، 2014-15، 2018-19 میں  تیسری پوزیشن حاصل کی تھی۔ اس مرتبہ بہترین فارورڈ کیلئے بھی وہ ٹاپ تھری میں نہیں آ سکے۔ اس کیٹیگری میں کرسٹیانو رونالڈو 18 پوائٹس کے ساتھ آٹھویں پوزیشن پر رہے۔ حالانکہ رواں ماہ ہی رونالڈ نے 100 انٹرنیشل گول کرنے والے دنیا کے دوسرے اور یورپ کے پہلے مرد فٹبالر کا اعزاز حاصل کیا ہے۔

اسپین کے مشہور فٹبال کلب بارسلونا کو کوارٹر فائنل میں بائرن میونخ کے ہاتھوں 2-8 کے بڑے مارجن سے تاریخی شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ یہ بدترین شکست کپتان لیونل میسی کیلئے بھی بڑا دھچکہ تھی۔ اس میچ میں وہ اپنی کرشماتی کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کر سکے تھے۔ چیمپیئنز لیگ میں ان کا جادو سر چڑھ کر نہ بول سکا اور وہ بھی رونالڈو کی طرح نے بھی 8 میچوں میں صرف تین مرتبہ گول پوسٹ میں پہنچانے میں کامیاب ہوئے۔ لیونل میسی نے دو بار 2010-11 اور 2014-15 میں یوایفا کے بہترین فٹبالر کا ایوارڈ جیتا اور وہ چار مرتبہ 2011-12، 2012-13، 2016-17 اور 2018-19 میں رنرز اپ رہے۔ رونالڈو کی طرح میسی بھی بہترین فارورڈ کیلئے ٹاپ تھری میں نہیں آ سکے۔ وہ 33 پوائنٹس کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے۔

یورپ کے بہترین فارورڈ کیلئے ٹاپ تھری میں جگہ بنانے والوں میں پیرس سینٹ جرمین کے برازیلین اسٹار نیمار، فرانس کے کلیان ایمباپے اور بائرن کے لیوانڈوسکی ہیں۔ بائرن کے سرگئی گنیبری 46 پوائنٹس چوتھے، سالسبرگ ڈورٹمنڈ کے ارلنگ ہیلارڈ 33 پوائٹس پانچویں، میسی چھٹے تھامس مولر 29 پوائنٹس ساتویں، کرسٹیانو رونالڈو آٹھویں، پیرس سینٹ جرمین کے اینجل ڈی ماریا 9 پوائنٹس کے ساتھ نویں اور لیور پول کے سعدیو مانے 8 پوائنٹس کے ساتھ دسویں نمبر پر رہے۔ بہترین ڈیفنڈر کے ایوارڈ کیلئے بائرن میونخ ہی کے تین کھلاڑیوں میں مقابلہ ہے جن میں ڈیوڈ ایلبا، جوشوا کمچ اور الفانسو ڈیویز شامل ہیں۔ بہترین مڈفیلڈر ایوارڈ کیلئے مانچسٹر سٹی کے ڈی بروئنے بائرن میونخ کے تھیاگو الکانٹرا اور  تھامس مولر مد مقابل ہیں۔

بہترین خاتون فٹبالر کے ایوارڈ کیلئے تین کھلاڑی مدمقابل ہیں جن میں انگلینڈ سے تعلق رکھنے والی رائٹ بیک لوسی برونز، ڈنماک کی اٹیکر پرمیلی ہارڈر اور فرانسیسی ڈیفنڈر وینڈی رینارڈ شامل ہیں۔ لوسی برونز نے 2018-19 میں بہترین یوایفا خاتون فٹبالر کا اعزاز جیتا تھا وہ مسلسل تین برسوں سے یوایفا ویمنز چیمپئنز لیگ ٹائٹل جیت رہی ہیں۔ انہوں نے اگست میں لیون کی نمائندگی کرتے ہوئے ٹورنامنٹ جیتا تھا۔ اب وہ لیون فٹبال کلب کو چھوڑ کر واپس مانچسٹر سٹی کی ٹیم میں شامل ہو گئی ہیں جس کو انہوں نے 2017 میں چھوڑا تھا۔ ڈنمارک کی ہارڈر نے ماہ رواں میں وولفسبرگ چھوڑ کر چیلسی کلب کو جوائن کیا ہے۔ فرانسیسی ڈیفنڈر وینڈی نے لیون کو اگست میں ویمنز چیمپئنز لیگ جتوانے میں مرکزی کردار ادا کیا تھا۔

بہترین کوچ کیلئے جرمنی سے تعلق رکھنے ومالے تین کوچ مد مقابل ہیں جو مختلف کلبوں کی کوچنگ کر رہے ہیں۔ ان میں بائرن میونخ کے ہانسی فلک لیورپول کے جرگن کلوپ اور آر بی لیپزگ کے جولیان نیگلسمان شامل ہیں۔ بائرن کے کوچ ہانسی فلک نے نومبر میں ذمہ داری سنبھالی تھی اور بائرن کو ٹرپل جتوانے کا کارنامہ انجام دیا اور ٹیم کو 20 میچز شکست کا منہ نہیں دیکھنا پڑا۔ جرگن کلوپ تین دہائیوں میں پہلی بار 18 پوائنٹس کی واضح برتری سے لیورپول کو انگلش پریمیئر لیگ جتوانے کا کارنامہ انجام دیا اور یوایفا سپر کپ میں بھی کامیابی دلوائی۔ 33 سالہ جولیان نیگلسمان یو ایفا چیمپیئنز لیگ ناک آؤٹ ٹائی جیتنے والے کم عمر ترین کوچ ہیں وہ پہلی بار آر بی لیپزگ کو چیمپیئنز لیگ کے سیمی فائنل مرحلے میں پہنچانے کا کارنامہ انجام دیا۔

چیمپئنز لیگ میں کرسٹیانو رونالڈو کی کارکردگی غیر متاثر کن رہی تھی اور وہ آٹھ میچوں میں صرف تین گول کر سکے۔ ان کا اطالوی فٹبال کلب یوونٹس چیمپیئنز لیگ کے پری کوارٹر فائنل میں فرانسیسی کلب اولمپک لیون کے ہاتھوں غیر متوقع شکست کے بعد باہر ہو گیا تھا۔ کرسٹیانو رونالڈو نے تین مرتبہ 2013-14‘ 2015-16 اور 2016-17 ء میں یوایفا کے بہترین فٹبالر کا اعزاز اپنے نام کیا اور 2011-12 اور 2017-18 میں رنرز اپ رہے۔ یہ بات دل چسپ ہے کہ 2011-12 میں  روایتی حریف رونالڈو اور میسی دونوں مشترکہ طور پر رنرز اَپ رہے تھے۔ رونالڈو نے 2010–11, 2012–13, 2014–15, 2018–19 میں تیسری پوزیشن حاصل کی تھی۔ اس مرتبہ بہترین فارورڈ کیلئے بھی وہ ٹاپ تھری میں نہیں آ سکے۔ اس کیٹیگری میں کرسٹیانو رونالڈو 18 پوائٹس کے ساتھ آٹھویں پوزیشن پر رہے۔ حالانکہ رواں ماہ ہی رونالڈ نے 100 انٹرنیشل گول کرنے والے دنیا کے دوسرے اور یورپ کے پہلے مرد  فٹبالر کا اعزاز حاصل کیا ہے۔

اسپین کے مشہور فٹبال کلب بارسلونا کو کوارٹر فائنل میں بائرن میونخ کے ہاتھوں 2-8 کے بڑے مارجن سے تاریخی شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ یہ بدترین شکست کپتان لیونل میسی کیلئے بھی بڑا دھچکہ تھی۔ اس میچ میں وہ اپنی کرشماتی کارکردگی کا مظاہرہ نہیں کر سکے تھے۔ چیمپیئنز لیگ میں ان کا جادو سر چڑھ کر نہ بول سکا اور وہ بھی رونالڈو کی طرح نے بھی 8 میچوں میں صرف تین مرتبہ گول پوسٹ میں پہنچانے میں کامیاب ہوئے۔ لیونل میسی نے دو بار 2010-11 اور 2014-15 میں یوایفا کے بہترین فٹبالر کا ایوارڈ جیتا اور وہ چار مرتبہ 2011–12, 2012–13, 2016–16, 2018–19 میں رنرز اپ رہے۔ رونالڈو کی طرح میسی بھی بہترین فارورڈ کیلئے ٹاپ تھری میں نہیں آ سکے۔ وہ 33 پوائنٹس کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے۔

یورپ کے بہترین فارورڈ کیلئے ٹاپ تھری میں جگہ بنانے والوں میں پیرس سینٹ جرمین کے برازیلین اسٹار نیمار‘ فرانس کے کلیان ایمباپے اور بائرن کے لیوانڈوسکی ہیں۔ بائرن کے سرگئی گنیبری 46 پوائنٹس چوتھے‘ سالسبرگ ڈورٹمنڈ کے ارلنگ ہیلارڈ 33 پوائٹس پانچویں‘ میسی چھٹے‘ تھامس مولر 29 پوائنٹس ساتویں‘ کرسٹیانو رونالڈو آٹھویں‘ پیرس سینٹ جرمین کے اینجل ڈی ماریا 9 پوائنٹس کے ساتھ نویں اور لیورپول کے سعدیو مانے 8 پوائنٹس کے ساتھ دسویں نمبر پر رہے۔   بہترین ڈیفنڈر کے ایوارڈ کیلئے بائرن میونخ ہی کے تین کھلاڑیوں میں مقابلہ ہے جن میں ڈیوڈ ایلبا‘ جوشوا کمچ اور الفانسو ڈیویز شامل ہیں۔ بہترین مڈفیلڈر ایوارڈ کیلئے مانچسٹر سٹی کے ڈی بروئنے بائرن میونخ کے تھیاگو الکانٹرا اور تھامس مولر مد مقابل ہیں۔

بہترین خاتون فٹبالر کے ایوارڈ کیلئے تین کھلاڑی مدمقابل ہیں جن میں انگلینڈ سے تعلق رکھنے والی  رائٹ بیک لوسی برونز‘ ڈنماک کی اٹیکر پرمیلی ہارڈر اور فرانسیسی ڈیفنڈر وینڈی رینارڈ شامل ہیں۔ لوسی برونز نے 2018-19 میں بہترین یوایفا خاتون فٹبالر کا اعزاز جیتا تھا وہ مسلسل تین برسوں سے یوایفا ویمنز چیمپئنز لیگ ٹائٹل جیت رہی ہیں۔ انہوں نے  اگست میں لیون کی نمائندگی کرتے ہوئے ٹورنامنٹ جیتا تھا۔ اب وہ  لیون فٹبال کلب کو چھوڑ کر واپس مانچسٹر سٹی کی ٹیم میں شامل ہوگئی ہیں جس کو انہوں نے 2017 میں چھوڑا تھا۔ ڈنمارک کی ہارڈر نے ماہ رواں میں وولفسبرگ چھوڑ کر چیلسی کلب کو جوائن کیا ہے۔ فرانسیسی ڈیفنڈر وینڈی نے لیون کو اگست میں ویمنز چیمپئنز لیگ جتوانے میں مرکزی کردار ادا کیا تھا۔

بہترین کوچ کیلئے جرمنی سے تعلق رکھنے والے تین کوچ مد مقابل ہیں جو مختلف کلبوں کی کوچنگ کر رہے ہیں۔ ان میں بائرن میونخ کے ہانسی فلک لیورپول کے جرگن کلوپ اور آر بی لیپزگ کے جولیان نیگلسمان شامل ہیں۔ بائرن کے کوچ ہانسی فلک نے نومبر میں ذمہ داری سنبھالی تھی اور بائرن کو ٹرپل جتوانے کا کارنامہ انجام دیا اور ٹیم کو 20 میچز شکست کا منہ نہیں دیکھنا پڑا۔ جرگن کلوپ تین دہائیوں میں پہلی بار 18  پوائنٹس کی واضح برتری سے لیورپول کو انگلش پریمیئر لیگ جتوانے کا کارنامہ انجام دیا اور یوایفا سپر کپ میں بھی کامیابی دلوائی۔ 33 سالہ جولیان نیگلسمان یو ایفا چیمپیئنز لیگ ناک آؤٹ ٹائی جیتنے والے کم عمر ترین کوچ ہیں وہ پہلی بار آر بی لیپزگ کو چیمپیئنز لیگ کے سیمی فائنل مرحلے میں پہنچانے کا کارنامہ انجام دیا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More