منی لانڈرنگ ریفرنس،آصف زرداری اورفریال تالپورپرفردجرم عائد

سماء نیوز  |  Sep 28, 2020

تین ضمنی ریفرنسز میں شامل منی لانڈرنگ ریفرنس میں آصف علی زرداری اور فریال تالپور سمیت دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کردی گئی ہے۔

پیر کو اسلام آباد کی احتساب عدالت میں منی لانڈرنگ ریفرنس میں آصف زرداری اورفریال تالپورپرفردجرم عائد کردی گئی۔ دونوں ملزمان نے صحت جرم سے انکار کیا۔

عدالت نے آصف زرداری اور فریال تالپور کو جرم کی کاپیاں فراہم کردیں۔ اس موقع پر وکیل فاروق ایچ نائیک عدالت میں موجود نہیں تھے جس پر معاون وکیل نے عدالت کو کہا کہ فاروق ایچ نائیک کا انتظار کیا جائے۔ نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ملزم آصف زرداری خود عدالت میں موجود ہیں اس لیے ان پر فرد جرم عائد کی جاسکتی ہے۔میگا منی لانڈرنگ میں  حسین لوائی،انور مجید اور عبدالغنی مجید پر بھی فرد جرم عائد کی جانی ہے۔

اس کےعلاوہ ٹھٹہ ریفرنس اور پارک لین ریفرنس میں بھی دونوں ملزمان پر فرد جرم عائد کی جانی تھی اورکیس کےدیگر ملزمان کو بھی ذاتی حیثیت میں عدالت میں پیش ہونے کے لیے نوٹس جاری کئے گئےتھے۔پارک لین ضمنی ریفرنس اور ٹھٹھہ واٹر سپلائی کیس میں ملزمان کی حاضری مکمل نہ ہونےپر فردِجرم 5 اکتوبر تک موخرکردی گئی ہے۔نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر نے بتایا کہ دو ریفرنسز میں ملزمان غیر حاضر تھے جس کی وجہ سے فرد جرم موخر ہوئی،نیب کی درخواست پر عدالت نے غیر حاضر ملزمان کے ناقابل ضمانت وارنٹ جاری کیے ہیں۔منی لانڈرنگ ریفرنس میں عدالت نے13 اکتوبرکونیب کوگواہان پیش کرنے کا حکم دیا ہے،ان میں وہ تین گواہان شامل ہیں جنھوں نے بینک اکاؤنٹس کھولےتھے۔

 سابق صدر آصف زرداری کی جانب سے جعلی اکاؤنٹس کیس کا ٹرائل اسلام آباد ہائی کورٹ میں چیلنج کیا گیا ہے۔ وکلا کی جانب سے آصف علی زرداری کی میگامنی لانڈرنگ پارک لین ریفرنس میں بریت کی استدعا کی ہے اور فوری ٹرائل روکنےکی درخواست ہائیکورٹ میں دائر کی ہے۔ موقف اختیار کیا گیا ہے کہ جعلی اکاؤنٹ کیس میں نیب کا دائرہ اختیار ہی نہیں بنتا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More