کراچی میں دو ماہ کے دوران سات گرنیڈ وا کریکر حملے ہوئے

بول نیوز  |  Aug 12, 2020

کراچی میں گزشتہ دو ماہ کے دوران سکیورٹی اداروں اور پبلک مقامات پر سات گرنیڈ وا کریکر حملے کئے گئے۔

تفصیلات کے مطابق گزشتہ ہفتے 6 اگست کو دہشتگردوں کی جانب سے یونیورسٹی روڈ پر جماعت اسلامی کی ریلی پر دستی بم حملہ کیا گیا۔

جماعت اسلامی کی کشمیر ریلی پر حملے میں جماعت اسلامی کا ایک زمیدار رفیق تنولی جاں بحق اور 33 سے زاٸد کارکن وا ہمدرد زخمی ہوئے تھے۔

اس سے قبل ماہ جولاٸی کے دوران ایس ڈی پی او گلبہار کے دفتر پر دہشتگردوں کی جانب سے دستی بم پھینکا گیا، تاہم وہ خوش قسمتی سے پھٹ ناسکا جبکہ دہشتگردوں کی جانب سے سچل سکندر گوٹھ میں رینجرز کے سابق انسپکٹر کو بیکری پر دستی بم سے حملہ کرکے شہید کردیا گیا تھا۔

ادھر لیاقت آباد دس نمبر کے مقام پر دہشتگردوں کی جانب سے احساس پروگرام کے عارضی دفتر پر دستی بم پھینکا گیا، واقعے میں ایک راہگیر نوجوان جاں بحق اور قانون نافز کرنے والے ادارے کے دو اہلکاروں سمیت تین 3افراد زخمی ہوئے تھے۔

جون کے دوران دہشتگردوں کی جانب سے دو مختلف مقامات پر سکیورٹی ادارے کی موباٸل اور چوکی کو نشانہ بنایا گیا۔

دہشتگردوں نے جوہر پہلوان گوٹھ کے قریب رینجرز موباٸل اور شاہ لطیف میں رینجرز چوکی کو نشانہ بنایا۔

صرف ماہ جولاٸی کے دوران دہشتگردوں نے 4 چار پولیس اہلکاروں کو مختلف مقامات پر نشانہ بناکر شہید کیا گیا۔

مزید خبریں

Disclaimer: Urduwire.com is only the source of Urdu Meta News (type of Google News) and display news on “as it is” based from leading Urdu news web based sources. If you are a general user or webmaster, and want to know how it works? Read More